Mohsin Naqvi – The Great Poet’s Collection



Aankhain khuli rahain gi toh manzar bih ayengai
Zinda hai dil toh aur sitamgarr bhi ayengai

Pehchaan lo tamaam faqeeron kay khadd-o-khaal
Kuch log shab ko bhais badal kar bhi ayengai

Gehri khamosh jheel kay paani ko yun na chaidh
Cheenthay uday toh teri qaba par bhi ayengai

Khud ko chhupa na sheesha garon ki dukhaan mai
Sheeshay chamak rahey hain toh pathar bhi ayengai

Aye shehr yaar dasht say fursat nahi — magar!!
Niklay safar pay hum toh teray ghar bhi ayengai

*Mohsin* abhi saba ki sakhawat pay khush na ho
Jhonkay yehi basoorat-e-sarr sarr bhi ayengai…

==
Badla na teray bad b mozo-e-guftago”
“Tu ja chuka hai phir b meri mehfalon mein hai”
==
Mohsin Naqvi
==

Qatl kabhi chuptay thay sang kee deevaar ke beech
ab tou khulnay lagay maqtal bharay bazaar ke beech
==
Mein nay iss torr say chaha tujhy aksar jana
Jesay mahtab ko bay-ant sumandar chahay
Jesay soraj ki kiran seep k dil mein utray
Jesay khushbo ko hawa rang say hatt kar chahay

==

Qatal chuptay thay kabi sang ki deewar k bech
Ab to khulny lagy maqtal bhary bazar k beech

Apni poshak k chin jany pe afsoos na kar
Sar salamat nae rehty yahan dastar k bech

Surkhian aman ki talqeen mein masroof rahen
Haroof barod ugalty rahy akhbar k bech

Kash iss khuwab ki tabeer ki mohlat na mily
Sholy ugtay nazar aay mujhy gulzar k bech

dhalty soraj ki tamazat nay bikhar kar dekha
sar kasheeda mira saya saf-e-ashjar k bech

Rizq, malbos, makaN, sans, marz, qarz, dawa
Munqisem ho gya insaN inhe afkar k bech

Dekhy jaty na thy aanso mry jis say Mohsin
Aj hansty howy dekha usay aghyar k bech

==

Iltimas-e-Dua From All of You with another great ghazal of Mohsin

KABI TU MOHEET-E-HAWAAS THA, SO NAHE RAHA
MEIN TERY BAGHER UDAAS THA, SO NAHE RAHA

MERI WUSATON KI HAWAS KA KHANA KHARAB HO
MERA GAON SHEHR K PAS THA, SO NAHE RAHA

TERI DASTARAS MEIN THEN BAKH’SHESHEN, SO NAHE RAHEN
MRY LAB PE HARF-E-SPAAS THA, SO NAHE RAHA

MRA AKS MUJH SAY ULAJH PARA TO GIRA KHULI
KABI MEIN B CHEHRA SHANAS THA, SO NAHE RAHA

MRY BAD NOHA BA LAB HAWAYEN KAHA KAREN
WOH JO IK DAREEDA LIBAAS THA, SO NAHE RAHA

MEIN SHIKASTA DIL HUN SAF-E-ADDO KI SHIKAST PER
WOH JO LATF-E-KHOF-O-HIRAAS THA, SO NAHE RAHA
==
urdu
==
shayari

=

==

Two of my favourites :



Mohsin Naqvi Poetry


4,729 تبصرے

  1. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:39 am

    Mujh Se Naraaz Hai, To Chhor De Tanha Mujh Ko,
    Aye Zindagi! Dekh Mujhe Roz Tamaasha Na Bana….

  2. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:38 am

    Chale ja rahe hai liye apni tanhaye sath,
    Na raste ki parwah hai na manzil ki aas.

  3. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:38 am

    Ab To Meri Aankh Main Aik Ashk Bhi Nahin,

    Pehlay Ki Baat Aur Thi, Gham Tha Naya Naya…!!!

  4. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:37 am

    Is tarah loot liya sheer-e-tamanna ne hume,

    Zindagi bhi chheen li, or jaan se maara bhi nahi…!!!

  5. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:36 am

    Tum Sharma Ke Dekho Gi Jise Us Dil Pe Qyamat Aye Gi..

    Chup Jao Humari Ankhon Main Duniya Ki Nazar Lag Jaye Gi….!!!

  6. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:36 am

    *•. ˜”*°•.˜”*°••°*”˜.•°*”˜ . •*˜♥♥
    Adaa-E-Bey-Niazi Pe Humein Marna Bhi Aata Hai,

    Tou Phir Uss Be-Wafa Say Zindagi Ki Bheek KiYa MaangeIn???
    *•. ˜”*°•.˜”*°••°*”˜.•°*”˜ . •*˜♥♥

  7. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:34 am

    Ay Muqaddar mujhay Tarsaaye ga Aakhir kab tak…

    Ya Meri Baat Samajh ja, ya Mujhay pagal kr de….!!

  8. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:34 am

    Maqam-E-Mohabat Tu Ne Samjha Hi Nahi Warna
    Jahan Tak Tha Tera Sath Wahin Tak Thi Meri Zindagi

  9. AiK JhooT AuR SaHi said,

    اپریل 15, 2012 at 8:33 am

    Assalam-o-alaikum

    Ab Ke Baar Dekho Wo
    Kia Fareb Detey Han…

    Wo Phir Se Mil Rahe Han
    Bari Saadgi Ke Saath!

  10. اپریل 14, 2012 at 7:36 pm

    میری زندگی تو فراق ہے وہ ازل سے دل میں مکیں سہی
    وہ نگاہ شوق سے دور ہیں رگ جاں سے لاکھ قریں سہی

    ہمیں جان دینی ہے ایک دن کسی طرح وہ کہیں سہی
    ہمیں آپ کھینچیے دار پر جو نہیں کوئی ،تو ہمیں سہی

    سر طور ہو ، سر حشر ہو ، ہمیں انتظار قبول ہے
    وہ کبھی ملیں وہ کہیں ملیں وہ کبھی سہی وہ کہیں سہی

    نہ ہو ان پہ جو مرا بس نہیں کہ یہ عاشقی ہے ہوس نہیں
    میں ان ہی کا تھا میں ان ہی کا ہوں وہ میرے نہیں تو نہیں سہی

    جو ہو فیصلہ وہ سنائیے اسے حشر پر نہ اٹھائیے
    جو کریں گے آپ ستم وہاں وہ ابھی سہی وہ یہیں سہی

    اسے دیکھنے کی جو لو لگی تو نصیر دیکھ ہی لیں گے ہم
    وہ ہزار آنکھ سے دور ہو وہ ہزار پردہ نشیں سہی

  11. اپریل 14, 2012 at 7:25 pm

    ڈرا رہا ہے مسلسل یہی سوال مجھے
    گزار دیں گے یونہی کیا یہ ماہ و سال مجھے

    بچھڑتے وقت اضافہ نہ اپنے رنج میں کر
    یہی سمجھ کہ ہُوا ہے بہت ملال مجھے

    وہ شہر ِ ہجر عجب شہر ِ پُر تحیّر تھا
    بہت دنوں میں تو آیا ترا خیال مجھے

    تُو میرے خواب کو عجلت میں رائگاں نہ سمجھ
    ابھی سخن گہ ِ امکاں سے مت نکال مجھے

    کسے خبر کہ تہہ ِ خاک آگ زندہ ہو
    ذرا سی دیر ٹھہر، اور دیکھ بھال مجھے

    کہاں کا وصل کہ اِس شہر ِ پُر فشار میں اب
    ترا فراق بھی لگنے لگا محال مجھے

    اِسی کے دم سے تو قائم ابھی ہے تار ِ نفس
    یہ اک امید، کہ رکھتی ہے پُر سوال مجھے

    کہاں سے لائیں بھلا ہم جواز ِ ہم سفری
    تجھے عزیز ترے خواب، اپنا حال مجھے

    ابھر رہا ہوں میں سطح ِ عدم سے نقش بہ نقش
    تری ہی جلوہ گری ہوں، ذرا اُجال مجھے

    یہاں تو حبس بہت ہے، سو گردباد ِ جنوں
    مدار ِ وقت سے باہر کہیں اچھال مجھے

    پھر اُس کے بعد نہ تُو ہے، نہ یہ چراغ، نہ میں
    سحر کی پہلی کرن تک ذرا سنبھال مجھے

  12. اپریل 14, 2012 at 7:23 pm

    Hijr Ki Bad-dua Na Hoo Jana…!!
    Dekh Lena… Saza Na Hoo Jana…!!

    Morr Toa Be-Shumar Ayein Gay..!!
    Thak na Jana, Juda Na Hoo Jana..!!

    Ishq Ki Inteha Nahe Hoti..!!
    Ishq Ki Inteha Na Hoo Jana..!!

    Akhir Shab Udaas Chand K Saath..!!
    Eik Buj’ta Diaa Na Hoo Jana..!!

    Be-Irada Safar Par Niklay Hoo..!!
    Rastoon Ki Hawa Na Hoo Jana..!!

    Zindagi Dard Say I’barat Hay..!!
    Zindagi Say Khafa Na Hoo Jana..!!

    Ek Tumein Ko Khuda Say Manga Hay..!!
    Tum Kahein Be-Wafa Na Hoo Jana..!!

  13. اپریل 14, 2012 at 7:20 pm

    ہوتی نہیں جفا،تو وفا ہی کیا کرو
    تم بھی تو کوئی رسمِ محبت ادا کرو

    ہم تم پہ مر مٹے تو یہ کس کا قصور ہے
    آئینہ لے کے ہاتھ میں،خود فیصلہ کرو

    بیٹھو نہ محفلوں میں زمانہ خراب ہے
    دیکھو،ہماری بات کبھی سن لیا کرو

    اب ان پہ کوئی بات کا ہوتا نہیں اثر
    منت کرو،سوال کرو،التجا کرو

    شرمندہ ہوں کہ موت بھی آتی نہیں مجھے
    تم میرے لئے اب تو کوئی بد دعا کرو

    شائد کبھی تو دیکھے گا وہ تم کو جھانک کر
    اس کی گلی میں روز تماشا کیا کرو

  14. اپریل 14, 2012 at 7:19 pm

    کوئی حد نہیں ہے کمال کی
    کوئی حد نہیں ہے جمال کی

    وہی قرب و دور کی منزلیں
    وہی شام خواب خیال کی

    نہ مجھے ہی اس کا پتہ کوئی
    نہ اسے خبر میرے حال کی

    یہ جواب میری صدا کا ہے
    کہ صدا ہے اس کے سوال کی

    یہ نمازِ عصر کا وقت ہے
    یہ گھڑی ہے دن کے زوال کی

    وہ قیامتیں جو گزر گئیں
    تھی امانتیں کئ سال کی

    ہے منیر تیری نگاہ میں
    کوئی بات گہرے ملال کی

  15. اپریل 14, 2012 at 7:02 pm

    رکھتا ہے مجھے تھام کہ گرنے نہیں دیتا
    میں ٹوٹ بھی جاؤں تو بکھرنے نہیں دیتا

    اس ڈر سے کہیں کانٹا نہ چُب جائے ہاتھ میں
    وہ پھول بھی مجھ کو پکڑنے نہیں دیتا

    وہ اس قدر حساس محبت میں ہے میری
    کوئی غم میرے سینے میں وہ پلنےنہیں دیتا

    جس رات کی تاریکی سے آتا ہے مجھے خوف
    اس دن کو وہ پھر رات میں ڈھلنے نہیں دیتا

    جانے ہےکیسی اُسکی محبت کی انتہا
    کہ خود کو بھی بندھنوں میں بندھنے نہیں دیتا

  16. اپریل 14, 2012 at 7:01 pm

    بچھڑ کے تجھ سے تیری یاد کے نگر آئے
    کہ اک سفر سے کوئی جیسے اپنے گھر آئے

    ہمارے ساتھ رکے گی ہماری تنہائی
    تمہارے ساتھ گئے جو بھی در بدر آئے

    گماں بھٹکنے لگے تھے پسِ نگاہ مگر
    چراغ دور سے جلتے ہوئے نظر آئے

    چھٹہ غبار تو راہوں میں کتنے پھول کِھلے
    بجی جو ڈف تو فصیلوں پہ کتنے سر آئے

    بہار راس نہ آئی قفس نشانوں کو
    اڑان بھول گئے جوں ہی بال و پر آئے

  17. اپریل 14, 2012 at 6:57 pm

  18. اپریل 14, 2012 at 6:54 pm

    آنکھ میں بوند نہ ہو دل میں سمندر رکھنا
    دولتِ درد کو دنیا سے چھپا کر رکھنا

    کل گئے گذرے زمانوں کو خیال آئے گا
    آج اتنا بھی نہ راتوں کو منور رکھنا

    اپنی آشفتہ مزاجی پہ ہنسی آتی ہے
    دشمنی سنگ سے اور کانچ کا پیکر رکھنا

    آس کب نہیں تھی دل کو تیرے آ جانے کی
    پر نہ ایسی کہ قدم گھر سے نہ باہر رکھنا

    ذکر اس کا ہی سہی بزم میں بیٹھے ہو فراز
    درد کیسا ہی اٹھے ہاتھ نہ دل پر رکھنا

  19. اپریل 14, 2012 at 6:48 pm

    راکھ کے ڈھیروں میں خوابوں کا دُھواں ڈھونڈتے ہیں
    جو نہیں جس جگہ، ہم اُس کو وہاں ڈھونڈتے ہیں

    ساری دھرتی ہمیں پُھولوں سے بھرا تھال لگے
    ہم بھی خوشبو سے بھرا ایک جہاں ڈھونڈتے ہیں

    اِس کٹہرے میں کھڑے ہو کے نجانے کب سے
    اپنے حق میں بھی کوئی ایک بیاں ڈھونڈتے ہیں

    جب وہ منظر سے پرے تھا تو وہ دل سے تھا قریب
    پا لیا اُس کو تو، اب اُس کا دھیاں ڈُھونڈتے ہیں

    ہر ستم سہہ کے بھی ہوں ساتھ تو حیرت سے نہ دیکھ
    اب یقیں کھو گیا، ہم صرف گُماں ڈُھونڈتے ہیں

    ریت کی مِٹتی لکیروں میں بہت غور سے ہم
    اپنی گُم کردہ سی منزل کا نِشاں ڈُھونڈتے ہیں

    کتنے سادہ ہیں نشانے پہ کھڑے ہو کے بتول
    تیر کو تھام کے ہاتھوں میں، کماں ڈُھونڈتے ہیں

  20. اپریل 14, 2012 at 6:47 pm

    عمرگزرے گی امتحان میں کیا
    داغ ھی دیں گے مجھ کو دان میں کیا
    میری ہربات بے اثر ہی رہی
    نقص ھے کچھ مرے بیان میں کیا
    بولتے کیوں نہیں مرے حق میں
    آبلے پڑ گئے زبان میں کیا
    مجھ کو تو کوئی ٹوکتا بھی نہیں
    یہی ہوتا ہے خاندان میں کیا
    اپنی محرومیاں چھپاتےہیں
    ہم غریبوں کی آن بان میں کیا
    وہ ملے تو یہ پوچھنا ہے مجھے
    اب بھی ھوں میں تری امان میں کیا
    یوں جو تکتا ہے آسمان کو تو
    کوئی رہتا ہے آسمان میں کیا
    ہے نسیم بہار گرد آلود
    خاک اڑتی ہے اس مکان میں کیا
    یہ مجھے چین کیوں نہیں پڑتا
    ایک ہی شخص تھا جہان میں کیا

  21. اپریل 14, 2012 at 6:39 pm

    Bujh Rahey Thay Diye Gir Rahay Thay Shajjar, Log Hanstay Rahay
    Doobta Jaa Raha Thaa Kisi Ka Nagar, Log Hanstay Rahay

    Apnay Khwaboon Ke Raizay Sametay Huwey Mein Terey Shehar Men
    Jis Gali Se Bhi Guzra Har Ik Morh Per, Log Hanstay Rahay

    Teri Yaadon Ka Ik Kaarwaan Har Qadam Merey Hamraah Thaa
    Meri Tanhaeyoon Pe Magar Bekhabar, Log Hanstay Rahay

    Phir Wohi Saaneha Kal Zameeen Per Huwa, Baarishoon Ke Khuda
    Jhonpra Jal Raha Thaa Kisi Ka Magar, Log Hanstay Rahay

    Us Ke Naazuk Murjhaaye Huwey Haathoon Men Mehndi Sulaghti Rahi
    Aur Khushiyaan Manaatey Huwey Raat Bhar, Log Hanstay Rahay

    Us ke Gham Men Sissakti Rahi Zard Patton Men Chup Ke Hawa
    Jis Ke Hontoo Pe Pheeki Hansi Dekh Kar, Log Hanstay Rahay

    Likh Ke Naam Us Ka Ghar Ki Har Ik Cheez Par Hum Sajaatay Rahay
    Dekh Ke Ghar Ke ali, Deewaar-O-Dar, Log Hanstay Rahay

  22. اپریل 14, 2012 at 6:37 pm

    Dhoop aur chhaon ke nazare thay
    Dil ki daulat jahan pe harey thay

    Bewafaai ka ab gilaa kaisaa
    Aap pehle bhi kab hamare thay

    Meri aankhon mai phelte huye rang
    Kal talak aapko bhi pyare thay

    Hai gharonda mera to mitti ka
    Teri raahon mai chaand tarey thay

    Chhoo liya tha gulon ko chahat se
    Jal gaye haath wo sharare thay

  23. اپریل 14, 2012 at 6:36 pm

    Yon Na Mil Mujh Say Khafa Ho Jesay…
    Sath Chal Moj-E-Saba Ho Jesay…

    Log Yon Dekh Kay Hans Detay Hain…
    Tu Mujhy Bhool Gia Ho Jesay…

  24. اپریل 14, 2012 at 6:32 pm

    پیار کے کھیل میں جیون اپنا ہار گئی تو پھر کیا ہوگا
    ہجر کی اگنی تجھ کو جلا کر مار گئی تو پھر کیا ہوگا

    بھیتر میں تُو ہُوک دبائے پھرتی رہتی ہے پل پل
    دیکھ جگر کی کوک ستاروں پار گئی تو پھر کیا ہوگا

    جوگی کا یوں گاؤں آنا ٹھیک نہیں ہے سوچ لے تو
    اُس کے پیچھے پیچھے بھولی نار گئی تو پھر کیا ہوگا

    دل کے ہاتھ سے دھڑکن جائے اور کبھی واپس نہ آئے
    روک لے ورنہ دھڑکن اب کی بار گئی تو پھر کیا ہوگا

    کہتے ہیں جو پریت کے دیس گیا وہ پتھر بن جاتا ہے
    سوچ سکھی، جو تُو بھی اسی سنسار گئی تو پھر کیا ہوگا

  25. اپریل 14, 2012 at 6:29 pm

    Salam my friends aj bohat din k baad kuch post send krney ka dil kiya hai.

    ye jo send krney laga hoon is ko plz goor se soniye ga or us k baad muje reply kijiye ga k apko kasey laga.

    Allah ap sub k parents ko bohat lambi life dey or jin k nahi hain Allah un ko jannat main jaga dey Ameen Sum Ameem
    Plz apne parents ka khyal rakhein in k siwa ap ki life main koi rishta such nahi hai,sub main thori thori milawat zaroor hai.

    bus………………………….
    Pray for me and my parents

  26. اپریل 14, 2012 at 6:21 pm

    بُت کدے جا کے کسی بت کو بھی سجدہ کرتے
    ہم کہاں سوچ بھی سکتے تھے کے ایسا کرتے

    عمر بھر کچھ بھی تو اپنے لیے ہم نے کیا!
    آج فرصت جو ملی ہم کو تو سوچا، کرتے

    ہم تو اس کھیل کا حصہ تھے ازل سے شاید
    سو تماشہ جو نہ بنتے تو تماشہ کرتے

    دل کو تسکین ہی مل جاتی ذرا سی اس سے
    نہ نبھاتے چلو تم کوئی تو وعدہ کرتے

    جوڑنے میں تو یہ پوریں بھی لہو کر ڈالیں
    کرچیوں کو جو نہ چھوتے تو یہ اچھا کرتے

    بھول جانے کا ارادہ بھی ارادہ ہی رہا
    جان پر بن ہی تو جاتی جو ہم ایسا کرتے

    اس اماوس نے کیے قتل کئی چاند بتول
    ہم اُجالے کی کہاں اِس سے تمنا کرتے

  27. اپریل 14, 2012 at 6:17 pm

    ye jo panjabi song hain freinds in ko slow awaz kr k or eyes close kr k soniye ga,yaqeenan ap ko achey lagye gye.

    na vi lage te sadye karey pasey lagy ne.

  28. اپریل 14, 2012 at 6:13 pm

    دل گِرفتاں ہی سہی بزّم سجا لی جائے
    یادِ جاناں سے کوئی شام نہ خالی جائے

    رفتہ رفتہ یہی ذنداں میں بدل جاتے ہیں
    اب کسی شہر کی بُنیاد نہ ڈالی جائے

    مصحفِ رخُ ہے کِسی کا کہ بیاضِ حافظ
    ایسے چہرے سے تو بس فعال نکالی جائے

    وہ مُّروت سے ملا ہے تو جُھکا لُوں گردن
    میرے دشمن کا کوئی وار نہ خالی جائے

    بے نوا سِحر کا سایہ ہے میرے دل پہ فراز
    کس طرح سے میری آشفتہ خیالی جائے

  29. اپریل 14, 2012 at 6:12 pm

    Salam my friends ye song muje kis ki yaad dilata hai so ap ko share kr raha hoon,

  30. اپریل 14, 2012 at 6:08 pm

    Un k andaz e kazazm un pe wo aana dil ka ,,,

    Haaye wo waqt,wo batain,wo zamana dil ka ,,,

    Na suna us ne tawajjo se fasana dil ka ,,,

    Umar guzri par dard na jana dil ka,

    Dil lagi dil ki lagi ban k mitha dyti hy ,,,

    Rog dushman ko b ya rab na lagana dil ka ,,,

    Wo bhi apny na hovy dil bhi gaya hathon se ,,,

    Aisay aanay se tau behtar hy na aana dil ka ,,,

    Un ki mehfil mein Faraz un ki tabasum ki qasam ,,,

    Dhekay reh gaay hum hath se jana dil ka …………

  31. اپریل 14, 2012 at 6:05 pm

  32. اپریل 14, 2012 at 5:59 pm

    Larkiaan Hamesha bewafa nahe hoti
    Wo tu majboreyon mein lepti hein
    Apny shedat bhary kheyalon mein
    Apny andar chupi ik Aurat mein
    Wo hamesha he Darti rehti hein
    Na tu jeeti hein na marti hein
    Larkiyaan Hamesha bewafa nahe hoti
    Per hamesha he Darti rehti hein
    Apnay reet Aur rawajon say
    any waly naye Azabon say
    Zarorat mein khely gulabon say
    Pyaar karti hein Aur chupatti hein
    Or har lamha darti Rehti hein
    Apny pyaar say apny Saye say
    Apny Rishton say Dil ki dhrkan say
    Apni khawish say Apni kushiyon say
    Larkiyaan Hamesha Bewafa Nahe hoti

  33. اپریل 14, 2012 at 5:58 pm

    ہم پرندے کہیں جاتے ہوئے مر جاتے ہیں
    دشت میں پیاس بُجھاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    ہم ہیں سوکھے ہوئے تالاب پہ بیٹھے ہوئے ہنس
    جو تعلق کو نبھاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    گھر پہنچتا ہے کوئی اور ہمارے جیسا
    ہم ترے شہر سے جاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    کس طرح لوگ چلے جاتے ہیں اُٹھ کر چُپ چاپ
    ہم تو یہ دھیان میں لاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    اُن کے بھی قتل کا الزام ہمارے سر ہے
    جو ہمیں زہر پلاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    یہ محبّت کی کہانی نہیں مرتی لیکن
    لوگ کردار نبھاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    ہم ہیں وہ ٹوٹی ہوئی کشتیوں والے تابش
    جو کناروں کو ملاتے ہوئے مر جاتے ہی

  34. اپریل 14, 2012 at 5:55 pm

    ہم پرندے کہیں جاتے ہوئے مر جاتے ہیں
    دشت میں پیاس بُجھاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    ہم ہیں سوکھے ہوئے تالاب پہ بیٹھے ہوئے ہنس
    جو تعلق کو نبھاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    گھر پہنچتا ہے کوئی اور ہمارے جیسا
    ہم ترے شہر سے جاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    کس طرح لوگ چلے جاتے ہیں اُٹھ کر چُپ چاپ
    ہم تو یہ دھیان میں لاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    اُن کے بھی قتل کا الزام ہمارے سر ہے
    جو ہمیں زہر پلاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    یہ محبّت کی کہانی نہیں مرتی لیکن
    لوگ کردار نبھاتے ہوئے مر جاتے ہیں

    ہم ہیں وہ ٹوٹی ہوئی کشتیوں والے تابش
    جو کناروں کو ملاتے ہوئے مر جاتے ہی

  35. اپریل 14, 2012 at 5:52 pm

    Tabasum send this song for all my friends

  36. اپریل 14, 2012 at 5:48 pm

    یہ احتیاط مرے دوستو سدا رکھنا
    رفاقتوں میں بھی تھوڑا سا فاصلہ رکھنا

    بھٹک نہ جائے مسافر کہیں اندھیرے میں
    محبتوں کا دیا راہ میں جلا رکھنا

    سکوں ملے گا تمہیں خار زار راہوں میں
    ہمیشہ ساتھ میں ماں باپ کی دعا رکھنا

    ہمارے اپنے ہمیں بھول ہی نہ جائیں کہیں
    تعلقات جہاں تک بنیں بنا رکھنا

    لہولہان کیا میری ہر تمنا کو
    وہ چاہتا ہے مرے زخم کو ہرا رکھنا

    چلو انہیں کے سہارے گزر تو جائے گی
    اداس آنکھوں میں کچھ خواب ہی سجا رکھنا

    گھرا ہے آدمی تشکیک کے گھروندے میں
    جو ہو سکے تو یقیں کا علم اٹھا رکھنا

    نسیم کتنے قناعت پسند تھے وہ لوگ
    جو جانتے نہ تھے کل کے لیے بچا رکھنا

  37. اپریل 14, 2012 at 5:46 pm

    Talash e manzil e janaan to ik bahana tha
    Tamam Umar me apni taraf rawana tha

    Mein Us ko Hasher me kis naam se sada deta
    Keh mera us ka taaruf to Ghaybana tha

    Wohi nahi to warq kis liye siyah karien
    Sukhan to arze tamena ka ik bahana tha

    Ajab kashish thi samender ki sabz ankhon mein

    Har aik Chishma usi ki taraf rawana tha

    Samand e shoq tha Amjid rawan dawan jab tak
    Hamre pichay sitaron ka ashiana tha

  38. اپریل 14, 2012 at 5:41 pm

    tery qareeb aa kay bari uljhanon mai hon
    mai dushmanon mai hon kay tery doston mai hon

    mujh say guraz pa hai tu har rasta badal
    mai sang-e-rah hon tu sabhi raston mai hon

    badla na mery bad bhi muzo-e-guftgu
    mai ja chuka hon phr bhi teri mehfilon mai hon

    mujh say bichar kay tu bhi roy ga umar bhar
    yeh soch lay keh mai bhi teri khahishon mai hon

  39. اپریل 14, 2012 at 5:40 pm

    *****************************************************************************
    Ye bat alg he k haara hoon na jhuka hoon
    Ik umr mgr zulm ki chakki me pissa hoon

    Ye kis ne kaha chaht-e-betab nhi mujh me
    So baar gira hoon to me so bar utha hoon

    Zakhmi hoon to mghrur smajhty hain log
    Mghrur sahi janib-e-manzil to chala hoon

    Gard utri to chamku ga usi tab se kal b

    Kia gham key me aj mitti me mila hoon

    Doon sb ko me apni safai to bhla q?
    Samny hoon sb k bura hoon k bhala hoon

    *****************************************************************************

  40. اپریل 14, 2012 at 5:22 pm

    Main Bojh Ban jaonga aik din Apne Hi DoStOn Pe JAB….
    Kandhay Badal Rahay Honge Wo Har Do Qadam K Baad

  41. اپریل 14, 2012 at 5:20 pm

    kaho wo chand kaisa tha,
    jider sab kuch lutta aey,
    jider ankhain gannwa aey,
    kaha silaab jaisa tha, bohat chaha ka bach niklain, mager sab kuch baha aey.
    kaho wo hijer kaisa tha,
    kabi choo kar daikha osay,
    tu tum na kia paya,
    kaha bass aag jaisa, osay choo ker tu apni rooh, ya tann mann jalla aey.
    kaho wo wassel kaisa tha,
    tumay jab choo lia oss na,
    tu kia ehsaas jaga tha,
    kaha ik rastay jaisa, jider say bas guzerna tha, makaan lakin benna aey.
    kaho wo chand kaisa tha,
    falak say jo uter aya,
    tumari ankhon main besnay,
    kaha wo khawab jaisa tha, nahi tabeer thi oss ki,osay ik shaab sulla aey.
    kaho wo ishq kaisa tha,
    benna sochay samjay,
    binna parkhay kia tum na,
    kaha tettli kay rang jaisa,bohat kacha bohat anokha saa,jabi oss ko bulla aey.
    kaho wo naam kaisa tha,
    jissay sehraaon or chenchal
    hawaon pay likha tum na,
    kaha bas mosamon jaisa, najanay kis ghari, kis pal,kissi roo main mitta aey.
    ……………………………………..

  42. اپریل 14, 2012 at 5:15 pm

    Kabhi jo ehd-e-wafa meri jaan tere mere darmeyaan toote
    Main chaahta hoon k is se pehle zameen pe ye aasmaan toote..

    Teri judaai main hoslon ki shikast dil par azaab thehri
    K jaise munh-zor zalzalon ki dhamak se koi chataan toote…..

    Usey yaqeen tha k usko marna hai phir bhi khawahish thi us k dil mein…
    K teer chalne se peishtar dast-e-dushmanaan mein kamaan toote…..

    Wo sang hai to gire bhi dil par wo Aaina hai to chubh hi jaaye….
    Kahin to mera yaqeen bikhre kahin to mera gumaan toote……..

    Ujarr ban ki udaas rut mein ghazal to Mohsin ne cheir di hai …
    Kise khabar hai k kis k ma’soom dil pe ab k ye taan toote….

  43. اپریل 14, 2012 at 5:10 pm

    khuda ka shukar,saharey baghair beet gai
    hamari umar tumharey baghair beet gai

  44. اپریل 14, 2012 at 5:07 pm

    تمھیں محبت ہوئی کسی سے

    ہمارے دل نے

    تمھیں بھلانے کی ٹھان لی ہے

    مگر یہ ممکن ہی کس طرح ہے تمھیں بھلا دیں

    ہماری پلکوں کی چلمنوں پیں تمھارا چہرہ چھپا ہوا ہے

    تمھیں جو دیکھا ‘

    ہماری دھڑکن کے تار باجے

    کھنن کھنن چوڑیاں پکاریں

    چھنن چھنن پائلوں نے چھیڑا فضائیں جھومیں

    ہتھیلیوں کو حنا نے چوما تو چومتی ہی چلی گئی ہے

    یہ زلف گیندے کی خوشبو ؤں میں رچی بسی ہے

    تمھیں جو دیکھا

    ہوا نے سر گوشیوں میں پوچھا

    ہو کھوئی کھوئی سی کس لئے تم؟

    گلاب جیسا تمھارا چہراہ کیا ہے کس نے؟

    یہ تھر تھراتے سے ہونٹ کیسے ہوئے گلابی؟

    تمھارے ماتھے پہ یہ اوس چمکی ہے کیوں اچانک؟

    تمھارے دل کی دھڑک دھڑک میںِ،

    کس کے ہاتھوں کی دستکوں کی ہے تھاپ شامل

    یہ بات بے بات چونک اُٹھتی ہو کس لئے تم؟

    سنو ، ستاروں سے تم کو باتوںکی خو پڑی ہے بتاؤ کب سے؟

    یہ کب کسے تم نے دئے دریچے پہ راکھ کے جگنے کی ٹھان لی ہے؟

    سنو سہیلی ،چھپا رہی ہو

    تمھیں محبت ہوئی کسی سے !

    تمھیں محبت ہوئی کسی سے

  45. اپریل 14, 2012 at 5:07 pm

    Sokhay hont, sulagti aankhen, sarson jesa rang
    barson bad woh dekh kay mujh ko reh jayay ga dang

    Maazi ka woh lamha mujh ko aaj bhi khoon rulayay
    ukhrdi ukhrdi baten uski gheron jaisa dhang

    taara bankar door ufaq par larzay dolay
    kachchi daor say urdnay wali dekho aek patang

    Dil ko to pehlay hi dard ki deemak chaat gai thi
    rooh ko bhi ab khata jayay tanhaai ka zang

    Un hi kay sadqay ya rub meri mushkil kar aasan
    meray jaisay aur bhi hen jo dil kay haathon tang

    Sub kuch day kar hans di aur phir kehnay lagi taqdeer

    kabhi na hogi poori teray dil ki aek umang

    kuin na ab apni churiiyun ko kirchi kirchi kr daloon
    dhekhi aj sunder nari piyare piii k saang

    Tabasum koi jo tujh say haray, jeet pe maan na karna
    jeet woh ho gi jab jito gye apnay aap say jang

  46. اپریل 14, 2012 at 5:03 pm

    Kitney mousam sargardaan they mujh se hath milaney main
    Main ney shayed dair kar di khood se bahar aaney main

    Ik nighah ka san’nata hai ik aawaz ka banjar pan
    main kitna tanha betha hoon qurbat ke veeraney main

    bistar sey karwat ka rishta toot gaya ik yaad ke sath
    khwab sarhaney sey uth betha takiye ko sarkaney main

    aaj uss phool ki khooshboo mujh main paiham shour machati hai
    jis ney behad ujlat barti khilney aur mujrjhaney main

    baat bananey wali ratein rang nikharney waley din
    kin rastoun par chor aaya main umr ka sath nibhaney main

    aik malal ki gard sametey main ne khood ko paar kia
    kaisey kaisey wasl guzarey hijr ka zakhm chhupaney main

    jitney dukh they jitni umeedein,sab sey brabar kaam lia

    main ney apney ainda ki ik tasweer bananey main

    aik wazahat ke lamhey main mujh par ye aehwaal khula
    kitni mushkil paish aati hai apna haal bataney main

    pehley dil ko aas dila kar beparwah ho jata tha
    ab tou Azm bikhar jata hoon main khood ko behlaney main

  47. اپریل 14, 2012 at 5:01 pm

    Badkismati Ki Siyaahi Maathe Pe Hai Mere,.
    Main Sajda Karke Bhi Rab Ko Manaa Na Saka,.

  48. اپریل 14, 2012 at 4:55 pm

    bohat maasum hey itna nahi maalum usko……
    juda hota hey bhala darya se kinara kese…

  49. اپریل 14, 2012 at 4:54 pm

    ///////*/*/*/*/*/*/**///////////////////////////////////////////////////////////////////

    Mujhe teri mohabbat mein kho jaane do,
    Har lamha mar ke aaj phir jee jaane do,

    Isse mahobbat ne dil ko aaj phir dhadkaya hai,
    Mujhe ishq ki baaho mein so jaane do,

    Tadap ki aag hai judaai ki baahon mein,
    Mujhe aaj iss mohabbat se mil jaane do,

    Meri saans chalti hai tere naam ki aahat pe,
    Mujh benaam ko iss naam mein kho jaane do,

    Kasam tujhe chalne wali hawaon ki mehboob,
    Mujhe iss mohabbat ki aag mein jal jaane do.

  50. اپریل 14, 2012 at 4:50 pm

    K ashq rokna tum se mohaal hona hay
    Har aik lab pe hay meri wafa k afsanay
    Tere sitaam ko abhi lazawal hona hay
    Tumhain khabar hi nahin tum to loot jao gay
    Tumharay hijar main ik lamha sal hona hay
    Humari rooh pe jaab bhi azaab otrain hay
    Tumhari yaad ko is dil ki dhaal hona hay
    Kabhi to roye ga woh bhi kisi ki bahoon main
    Kabhi to us ki hansi ko zawal hona hay
    Milay gi hum ko bhi apne naseeb ki khushiyaan
    Bas intizaar hay kab yeh kamal hona hay
    Har aik shaks chalay ga humari rahoon per
    Mohabatoon main humahin woh misaal hona hay
    Zamana jis k kham-o-peech main olajh jaye
    Humari zaat ko aisa sawal hona hay
    ” yaqeen hay mujh ko woh loot aye ga
    Usay bhi apne kiye ka malal hona hay

  51. اپریل 14, 2012 at 4:48 pm

    aankh se duur na ho dil se utar jaayegaa
    vaqt kaa kyaa hai guzarataa hai guzar jaayegaa
    itanaa maanuus na ho Khilvat-e-Gam se apanii
    tuu kabhii Khud ko bhii dekhegaa to dar jaayegaa
    tum sar-e-raah-e-vafaa dekhate rah jaaoge
    aur wo baam-e-rafaaqat se utar jaayegaa
    zindagii terii ataa hai to ye jaanevaalaa
    terii baKhshiish terii dahaliiz pe dhar jaayegaa
    duubate duubate kashtii to ochhaalaa de don
    main nahiin koii to saahil pe utar jaayegaa
    zabt laazim hai magar dukh hai qayaamat kaa ‘Faraz’

  52. اپریل 14, 2012 at 4:46 pm

    Hum pe faqat ilzaam k hum hain zuban daraz…….
    hum ne to bus kaha tha hamain tum se piyar hai….!

  53. اپریل 14, 2012 at 4:45 pm

    Duwaa Ka Toota Huwa Harf Sard Aah Mai’n Hay
    Teyri Juddai Ka Manzar Abhi Nigaah Mai’n Hay

    Tairay Badalnay Kay Ba-Wajood Tujh Ko Chaa’ha Hay
    Yeh Aitraaf Bhi Shamil Mairay Gunaah Mai’n Hay

    Azaab Daiga To Phir Mujh Ko Khuwaab Bhi Daiga
    Mai’n Mutma’in Hoo’n Maira Dill Teyri Panaah Mai’n Hay

    Jissay Baa’har Kay Mehmaan Khaali Chor’h Aaey
    Wo Ik Makaan Abhi Tak Makee’n Ki Chaa’ha Mai’n Hay

    Yeh Hi Wo Dinn Thay Jab ik Doosray Ko Paaya Tha
    Humaari Saalgirrah Theek Ab Kay Maa’ha Mai’n Hay

    Mai’n Batch Bhi Jaoo’n To Tanhaai Maar Daley Gi
    Mairay Qabeelay Ka Har Fard, Qatal Gaaha Mai’n Hay

  54. اپریل 14, 2012 at 4:44 pm

    wafa mey morh dikhata hey khuda kese kese.
    wo shaks rooth gya hey usey manau kese….

    wo jiska hunar hey aankho ko sirf aansu dena.
    yaqeen usko mohabbat ka dilaau kese………..

    yaad se jiski mey ik lamha ghafil bhi nahi……..
    naam phir uska merey dil se mitaau kese……..

    bohat maasum hey itna nahi maalum usko……
    juda hota hey bhala darya se kinara kese……

    kab mey jana tha teri aankh ki gehrai ko…….
    doob ke unmey bhala phir mey sanbhalta kese.

  55. اپریل 14, 2012 at 4:42 pm

    Kehne ko bahot kuch hai dil mein
    Bas lafzon ki hai kami
    Baat unhe kaise yeh samjhaayein ki
    Zindagi mein sirf unhi ki hai kami

    Dekhte hi dekhte din mahine saal guzar gaye
    Dekhte hi dekhte woh dil ke kareeb aa gaye
    Dekhte hi dekhte chhod gaye hain aankhon mein nami
    Dil ko tadpaaye ab bas unhi ki kami

    Kya kahein unpe kitna bharosa kiya tha
    Dosti sada nibhaane ka waada kiya tha
    Tod diya ek pal mein bharosa, waada aur dil
    Kya pal bhar ki khushi ke khaatir yeh waada kiya tha?

  56. اپریل 14, 2012 at 4:41 pm

    “Tera Na Ho Saka To Mar Jaon Ga Faraz.
    Kitna Khobsurat Wo Jhoot Bolta Tha”.

  57. اپریل 14, 2012 at 4:39 pm

    Mohabat khud batati hai
    Kahan kiska thikana hai
    Kisay aankhon main rakhna hai
    Kisay dil main basana hai
    Reha karma hai kisko aur
    Kisay zanjeer karma hai
    Mitana hai kisay dil say
    Kisay tehreer karma hai
    Issay malom hota hai
    Safar dushwar kitna hai
    Kisi ki chasm-e-girya main
    Chupa iqrar kitna hai
    Shajar jo girnay wala hai
    Wo saya daar kitna hai
    Mohabbat khud batati hai
    Kahan kiska thikana hai..!

  58. اپریل 14, 2012 at 4:38 pm

    dam e rukhsat usay jeene ki duaa di hum ne
    aur phir akhri kashti bhi jala di hum ne

    mil hi jaye kisi tabeer ko shayed koi khwab
    aks e deewar per tasveer bana di hum ne

    rooh ko jism k zindaan mein rakhne k liye
    Bazm e umeed sitaron se saja di hum ne

    teergi had se barhi dil k nihaan khanon mein
    bhoolne wale teri yaad jala di hum ne

    doobti sham mein kirno ko bachane k liye
    Rair k gher pe bhi deewar utha di hum ne

    koun aye ga palat ker humain lay jane ko
    lo chiraaghon ki sar e sham barha di hum ne

    raakh hote jate teri aag se sundar sapne
    aarzo e shamma teri khud hi bujha di hum ne

    budgumani se nikal aye gumaan ki had per
    beyaqeeni ki feeza aaj mita di hum ne

    Apni hi saanson se dum ghutne laga jab
    Qarza e jaan de ker saza apni ghata di hum ne

  59. اپریل 14, 2012 at 4:33 pm

    ‘”Ham na badlein gay waqt ki raftaar kay sath,,,
    ‘”Faraz”‘
    Ham jab b milen gay andaz purana hoga…’”.

  60. اپریل 14, 2012 at 4:32 pm

    Salam To my all friends kay hall hai ap sub ka bohat achi post ja rahi hai sub ki,Allah ap sub ko hamesha khush rakhey Ameen Sum Ameen


Leave a Reply / Ap ka pegham

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

Follow

Get every new post delivered to your Inbox.

Join 375 other followers

%d bloggers like this: