Top Commenters of Urdu Poetry Blog – 2011 in review


Saal 2011 kay Top Commenter mandarjazail hain :

Our most commented on post in 2011 was Noshi Gilani Poetry Ghazals Shayari

These were your 5 most active commenters of 2011:

Perhaps you could follow their blog, Facebook or twitter send them a thank you note?

The WordPress.com stats helper monkeys prepared a 2011 annual report for our blog.

Here’s an excerpt:

London Olympic Stadium holds 80,000 people. This blog was viewed about 500,000 times in 2011. If it were competing at London Olympic Stadium, it would take about 6 sold-out events for that many people to see it.

Click here to see the complete report.

Bundles of Thanks for your support🙂

Keep it up…


8,050 تبصرے

  1. Farman Irshad said,

    جولائی 29, 2016 at 1:14 شام

    Suna hai aesa khwab lambi umar ki elamat.

    Allah hi jane keh
    es ki kia Haqiqat hai?

  2. Dııyẳ said,

    جولائی 25, 2016 at 3:28 شام

    ہے کوئی خواب کی تعبیر بتانے والا ..!!
    میں نے دیکھا اپنی لاش پہ رُوتے خود کو.. !!

    محسن نقوی

  3. Dııyẳ said,

    جولائی 25, 2016 at 3:26 شام

    ﮐﭽﮭﮧ ﻟﻮﮒ ﺑﮭﯽ ﻭﮨﻤﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﮔﺮﻓﺘﺎﺭ ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ
    ﮐﭽﮭﮧ ﺷﮩﺮ ﮐﯽ ﮔﻠﯿﺎﮞ ﺑﮭﯽ ﭘﺮﺍﺳﺮﺍﺭ ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ
    ﮨﮯ ﮐﻮﻥ ﺍﺗﺮﺗﺎ ﮨﮯ ؟ ﻭﮨﺎﮞ ﺟﺲ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﭼﺎﻧﺪ
    ﮐﮩﻨﮯ ﮐﻮ ﺗﻮ ﭼﮩﺮﮮ ﭘﺲ ﺩﯾﻮﺍﺭ .. ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ
    ﮨﻮﻧﭩﻮﮞ ﮐﮯ ﺳﻠﮕﺘﮯ ﮨﻮﮰ ﺍﻧﮑﺎﺭ ﭘﮧ ﻣﺖ ﺟﺎ
    ﭘﻠﮑﻮﮞ ﺳﮯ ﭘﺮﮮ ﺑﮭﯿﮕﺘﮯ ﺍﻗﺮﺍﺭ ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ
    ﯾﮧ ﺩﮬﻮﭖ ﮐﯽ ﺳﺎﺯﺵ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻣﻮﺳﻢ ﮐﯽ ﺷﺮﺍﺭﺕ
    ﺳﺎﺋﮯ ﻭﮨﺎﮞ ﮐﻢ ﮨﯿﮟ ﺟﮩﺎﮞ ﺍﺷﺠﺎﺭ ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ
    ﺑﮯ ﺣﺮﻑ ﻃﻠﺐ ﺍﻥ ﮐﻮ ﻋﻄﺎ ﮐﺮ ﮐﺒﮭﯽ ﺧﻮﺩ ﺳﮯ
    ﻭﮦ ﯾﻮﮞ ﮐﮧ ﺳﻮﺍﻟﯽ ﺗﯿﺮﮮ ﺧﻮﺩ ﺩﺍﺭ ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ
    ﺗﻢ ﻣﻨﺼﻒ ﻭ ﻋﺎﺩﻝ ﮨﯽ ﺳﮩﯽ ﺷﮩﺮ ﻣﯿﮟ ﻟﯿﮑﻦ
    ﮐﯿﻮﮞ ﺧﻮﻥ ﮐﮯ ﭼﮭﯿﻨﭩﮯ ﺳﺮ ﺩﺳﺘﺎﺭ ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ
    ﺍﮮ ﮨﺠﺮ ﮐﯽ ﺑﺴﺘﯽ ﺗﻮ ﺳﻼﻣﺖ ﺭﮨﮯ ﻟﯿﮑﻦ
    ﺳﻨﺴﺎﻥ ﺗﯿﺮﮮ ﮐﻮﭼﮧ ﻭ ﺑﺎﺯﺍﺭ ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ ؟؟..
    ﻣﺤﺴﻦ ﮨﻤﯿﮟ ﺿﺪ ﮨﮯ ﮐﮧ ﮨﻮ ﺍﻧﺪﺍﺯ ﺑﯿﺎﮞ ﺍﻭﺭ
    ﮨﻢ ﻟﻮﮒ ﺑﮭﯽ ﻏﺎﻟﺐ ﮐﮯ ﻃﺮﻓﺪﺍﺭ ﺑﮩﺖ ﮨﯿﮟ

  4. Dııyẳ said,

    جولائی 25, 2016 at 3:25 شام

    آج بھی عادتوں میں اوّل ھے ..!!

    تیرے کوچے سے ھو کے گھر جانا ..!!

  5. AiK JhooT AuR SaHi said,

    دسمبر 2, 2015 at 10:54 صبح

    رازِ سُکوں کیا ہے؟
    کہامشکل میں رہتا ہوں
    کہا آسان کر ڈالو!
    کہ جس کی چاہ زیادہ ہو
    وہی قربان کر ڈالو!
    کہا بے قلب ہیں آہیں
    کہا اُس سے تڑپ مانگو!
    اُٹھو تاریکیءِ شب میں
    ذرا خونِ جگر ڈالو!
    کہا رازِ سُکوں کیا ہے؟
    کہا لوگوں کے دکھ بانٹو!
    جو چہرہ بے دھنک دیکھو
    اُسے رنگوں سے بھر ڈالو!

  6. AiK JhooT AuR SaHi said,

    دسمبر 2, 2015 at 10:53 صبح

    اے محبت تیری قسمت کہ تجھے مفت ملے
    ھم سے دانا جو کمالات کیا کرتے تھے
    خشک مٹی کو عمارات کیا کرتے تھے
    اے محبت یہ تیرا بخت کہ بن مول ملے
    ھم سے انمول جو ھیروں میں تُلا کرتے تھے
    ھم سے منہ زور جو بھونچال اُٹھا رکھتے تھے
    اےمیری بھاگ بھری ھم تیرے مجرم ٹھہرے
    ھم جو لوگوں سے سوالات کیا کرتے تھے
    ھم جو سو باتوں کی اک بات کیا کرتے تھے
    تیری تحویل میں آنے سے ذرا پہلے تک
    ھم بھی اس شہر میں عزت سے رھا کرتے تھے
    ھم بگڑتے تو بہت کام بنا کرتے تھے
    اور اب تیری سخاوت کے گھنےسائے میں
    خلقتِ شہر کو ھم زندہ تماشا ٹھہرے
    جتنے الزام تھے مقسوم ھمارا ٹھہرے
    اے محبت ذرا انداز بدل لے اپنا
    تجھہ کو آئندہ بھی عُشّاق کا خوں پینا ھے
    ھم تو مر جائیں گے تجھ کو مگر جینا ھے
    اے محبت تیری قسمت کہ تجھے مفت ملے۔۔

  7. AiK JhooT AuR SaHi said,

    دسمبر 2, 2015 at 10:51 صبح

    تضادِ جذبات میں یہ نازک مقام آیا تو کیا کرو گے
    میں رو رہا ہوں تو ہنس رہے ہو میں مسکرایا تو کیا کرو گے
    مجھے تو اس درجہ وقتِ رخصت سکوں کی تلقین کر رہے ہو
    مگر کچھ اپنے لیے بھی سوچا، میں یاد آیا تو کیا کرو گے
    کچھ اپنے دل پر بھی زخم کھاؤ مرے لہو کی بہار کب تک
    مجھے سہارا بنانے والو، میں لڑکھڑایا تو کیا کرو گے
    ابھی تو تنقید ہو رہی ہے مرے مذاقِ جنوں پہ لیکن
    تمہاری زلفوں کی برہمی کا سوال آیا تو کیا کرو گے
    ابھی تو دامن چھڑا رہے ہو، بگڑ کے قابل سے جا رہے ہو
    مگر کبھی دل کی دھڑکنوں میں شریک پایا تو کیا کرو گے


Leave a Reply / Ap ka pegham

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: